Ultimate magazine theme for WordPress.

سندھ کے مزدوروں کیلئے خوشخبری، صوبائی حکومت نے بے نظیر مزدور کارڈ کے اجراء کے معاہدے پر دستخط کردیئے

0 219

کراچی (رپورٹ: سید موسیٰ رضا) سندھ حکومت کے محکمہ محنت و انسانی وسائل کے تحت سندھ ایمپلائز سوشل سیکیورٹی انسٹیوٹیشن سے رجسٹرڈ مزدوروں کو بے نظیر مزدور کارڈ کے اجراء کے معاہدے پر دستخط ہوگئے ہیں۔  سیسی سے رجسٹررڈ مزدوروں کو بے نظیر مزدور کارڈ کو اجراء کرنے کے معاہدے پر صوبائی وزیرسعید غنی اور چئیرمین نادار عثمان یوسف نے دستخط کئیے۔ سندھ حکومت کے محکمہ محنت و انسانی وسائل کے تحت سندھ ایمپلائز سوشل سیکیورٹی انسٹیوٹیشن سے رجسٹرڈ مزدوروں کو بے نظیر مزدود کارڈ کے اجراء کے معاہدے پر دستخط کی تقریب ہوئی۔ صوبائی وزیر سعید غنی نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بے نظیر مزدور کارڈز کے اجزاء سے محنت کشوں کو ان کا حق ملے گا،  صوبے میں کام کرنے کا والا مزدود سیسی میں رجسٹرڈ کرنے کا اہل ہوجائے گا، سیسی کے تمام سہولیات کا حق انہیں ملے گا، یہ شہید بے نظیر بھٹو کا وژن تھا، سندھ حکومت نے بےنظیر بھٹو کے خواب کو تکمیل کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ہر شہری کا ڈیٹا صرف نادار کے پاس ہے، 6 لاکھ 25 ہزار مزدور رجسٹرڈ ہیں لیکن تعداد اس سے کہیں زیادہ ہے، جب اس منصوبے پر عملدرآمد ہوگا تو ہر مزدور خود کو رجسٹرڈ کرا سکے گا،  ڈیٹا نہ ہونے کے سبب لاک ڈاؤن میں مزدوروں کی مدد نہ کرسکے، جس دن یہ منصوبہ مکمل ہوگا تو ہمارے پاس مزدوروں کا 100 فیصد ڈیٹا ہوگا، 6 لاکھ 25 ہزار مزدوروں کا صرف نمبر ہے ہمارے پاس لیکن ڈیٹا نہیں، مالکان بھی پابند ہونگے کہ ہر مزدور کو رجسٹرڈ کرائے، مزدوروں کو مالکان کا محتاج نہیں کریں گے ہر مزدور کو حق دینگے کہ وہ خود کو رجسٹرڈ کروائیں، یکم جنوری 2021 کو پہلا کارڈ جاری کریں گے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.