Ultimate magazine theme for WordPress.

ہماری طرح پی پی بھی ذوالفقار بھٹو سے لاتعلقی کا اعلان کریں (ایم کیم ایم)، وزیراعلیٰ کی تقریر ہارے ہوئے جواری کی تھی:پی ٹی آئی

0 70

کراچی (رپورٹ:سید موسیٰ رضا) سندھ اسمبلی میں اپوزیشن پارٹیوں کے رہنماوؑں پی ٹی آئی کے فردوس شمیم نقوی، حلیم عادل شیخ، ایم کیم ایم کے کنورنوید جمیل، محمد حسین، جی ڈی اے کے حسنین مرزا ودیگر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ گذشتہ روز وزیراعلیٰ کی بجٹ اسپیچ ہارے ہوئے جواری کی تھی، وزیراعلی نے جوکچھ کہا جھوٹ کا پلندہ تھا، کراچی کو پانی دو ٹرانسپورٹ دو، ہمیں وہ پانی نہیں چاہیئے کہ بارش آتا ہے تو پانی آتا ہے، محکمہ زراعت کو ساٹھ کروڑ کا ٹیکہ لگایا گیا، کتے کی ویکسین کھا گئے اور ایمبولینسز کے پیسے بھی نہیں چھوڑیں۔ حلیم عادل شیخ نے کہا کہ لاڑکانہ میں دوکروڑ کی دوائیاں قبرستان میں ملی، ویکسین نہ ملنے کی وجہ سے بچے موت کاشکار ہوتے ہیں، اربوں روپے کی گندم چوہے کھاگئےمراد علی شاہ جواب د، محکمہ خوراک کو تیرہ ارب کی سبسڈی کیوں دے رہے ہو، شگرملزکے نم پر جعلی سبسڈی دی، آراوپلانٹس اورراشن کا جواب دو، بارہ سال میں اربوں روپے کی کرپشن کا جواب دو۔ ایم کیو ایم کے محمد حسین نے کہا کہ کرپشن کے بادشاہ اور منشیات فروش سعید غنی نے جو کلمات اداکئے ہم ہوتے تو جواب دیتے، سعید غنی پاکستان کو تباہ کرنے کے لئے تم نے الذوالفقاربنائی، طیارے اغواکئے نیشنل رفائنری پر حملہ کیا، بھٹو کے بیٹے نے انڈیا جاکرمدد طلب کی، تاریخ کو مسخ نہیں کیا جاسکتا تم غداروطن ہو، تمہارےمنشیات فروشوں سے تعلقات ہیں، جب جے آئی ٹی رپورٹ سامنے آئے گی اس میں آصف زرداری اورفریال ٹالپور کا نام بھی آئے گی، جے آئی ٹی منظرعام پر لاتے سپریم کورٹ رکوانے نہیں جاتے۔ انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم پاکستان پر الزام لگانے سے پہلے آپ جان لو، ہم نے اپنے بانی سے لا تعلقی کا اعلان کیا، تم بھی ذوالفقار علی بھٹو سے لا تعلقی کا اعلان کرو، جس دن اسمبلی کا سیشن ہوگا ہم تمہارے سامنے اس پر بات کروں گا، اگر تم ذرہ اخلاقی جرءت ہے تو اس سے لاتعلقی کا اعلان کرنا۔جی ڈی اے کے رہنما حسنین مرزا کا کہنا تھا کہ آٹھویں بجٹ مرادعلی شاہ کے ذبانی سنی ایسی مایوس کن تقریرنہیں سنی، وزیراعلی نے ڈیڈھ گھنٹے مجموعی اشوزپر پروگرام پیش نہیں کیا، 45ارب ویج بورڈ ادا نہ کرنے کی بات پر فکر ہے، اگرملازمین کو تنخوہیں دینے کے پیسے نہیں تو بڑھائی کیوں گئی، اگروسائل میں گنجائش نہیں تو پیدا کرو، ٹیکس کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی صورت میں بل اسیمبلی میں لیا جاتا ہے، وہ بلز پاس کئےجارہے ہیں جو میمبران کو پڑہنے نہیں دیا گیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.