Ultimate magazine theme for WordPress.

سندھ میں کورونا سے لڑنے والے نرسز صوبائی حکومت کے خلاف پھٹ پڑے

0 233

کراچی (آن لائن نیوز روم) قومی ادارہ برائے صحت اطفال میں ینگ نرسز ایسوسی ایشن سندھ کے چیئرمین شاہد اقبال، رہنما اعجاز علی کلیری، ہیرا لال، السحر ناز، شاہد اقبال اور دیگر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ  موجودہ حالات میں موضی وباء کے پیشنظر نرسز بہترین کردار ادا کر رہے ہیں، صوبہ سندھ میں نرسز کو حفاظتی سہولیات کی فراہمی کا فقدان ہے، نرسز کی تنخواہوں میں کٹوتیاں کی جارہی ہیں، امتظامیہ کے عملے کے ساتھ تشدد کے واقعات بھی رپورٹ ہورہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ  سندھ حکومت کی یہ بے حسی کا منہ بولتا ثبوت ہے، حکومت کی جانب سے حفاظتی سہولیات نرسز کو فراہم کی جائیں تاکہ ہم موئثر کردار ادا کرتے رہیں، ہیلتھ پروفیشنل الاونس فی الفور منظور کی جائے، سمری سندھ حکومت کے پاس موجود ہے ایک سال گزر گیا ہے، حکومت سندھ کو طبی عملے کو مراعات دینے کے بجائے تنخواہوں کی مد میں کٹوتی کی ہے۔ رہنماوؑں نے کہا کہ مرتضی وہاب اور سعید غنی نے وعدہ کیا تھا جو اب تک پورا نہیں کیا گیا بے جا کٹوتیوں کا عمل روکا جائے، ہم مطالبہ کرتے ہیں نرسز کی بھی اسکریننگ کی جائے، علمیہ یہ ہے سندھ حکومت نرسز کے ٹیسٹ کرنے کے لئے تیار نہیں ہے، پانچ جے پی ایم سی میں مشتبہ کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں، ہم مستقل سندھ حکومت کو خط لکھ رہے ہیں جسکا جواب تاحال نہیں دیا گیا ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.