Ultimate magazine theme for WordPress.

پاکستان میں کورونا کی جعلی میڈیشن بناکر فروخت کرنے والا ڈاکٹر گرفتار، کلینک سیل

0 155

کراچی (آن لائن نیوز روم ڈیسک) محکمہ ہیلتھ نے کارروائی کرتے ہوئے کورونا وائرس کی جعلی میڈیسن بنا کر فروخت کرنے پر کلینک سیل کر دیا ہے۔ ڈپٹی کمشنر شیخوپورہ کی ہدایت پر ڈپٹی ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر قصر نماز چن نے ٹیم کے ہمراہ عطائی کے کلینک پر چھاپہ مارا۔ گرفتار کیے گئے عطائی ڈاکٹر محمد ضیا الحق قدیر خان نے دعوی کیا ہے اس نے کورونا وائرس کی دوائی 1980 میں ہی تیار کر لی تھی۔ اس نے بڑا دعوی یہ بھی کیا دوائی سے ہزاروں مریض صحت یاب بھی ہوچکے ہیں۔ دنیا کا کوئی بھی ملک اور عالمی ادارہ صحت تاحال کورونا کی دوائی نہیں بنا سکا۔ امریکا اور یورپی ممالک نے اربوں ڈالر اس سلسلے میں رکھے ہوئے لیکن وہ بھی کامیاب نہیں ہو سکے لیکن شیخوپورہ کے سپوت نے کر دیکھایا۔ کورونا کی میڈیسن تیار کرنے والے ڈاکٹر نے سوشل میڈیا پر بھی اشتہارات بھی اپلوڈ کیے ہوئے ہیں۔ ڈاکٹر بھی اتنے ماہر ہیں کہ انہوں نے اپنے اشتہار میں کورونا کو “کارینا” لکھا ہوا ہے۔ گورنر پنجاب اور معروف انڈین اداکار امیتابھ بچن کے آفیشل پیج پر بھی کورونا میڈیسن کے متعلق کمینٹس کیے گئے تھے جس پر کمشنر لاہور نے بھی نوٹس لیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.